نواب شاہ میں اسکول وین حادثہ قا نون کی حکمرانی نہ ہونے کے سبب پیش آیا،کراچی میں جاری دہشت گردی اور پشاور بم دھماکہ کی پر زورمذمت(سید راشد حسین گردیزی)

کراچی ( ) پاکستان فلاح پارٹی کے مرکزی سیکریٹری اطلاعات سید راشد حسین گردیزی نے اپنے ایک بیان میں نواب شاہ کے قریب اسکول وین کے حادثہ میں 17 طلباء سمیت 22کے جاں بحق ہونے والوں کے لواحقین سے دلی افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ قانون کی حکمرانی نہ ہونے کے سبب سے یہ حادثہ رونما ہوا انہوں نے کہا کہ پورے پاکستان میں ٹریفک قوانین کی جس طرح سے خلاف ورزی کی جاتی ہے اس کی مثال دنیا میں کہی نہیں ملے گی انہوں نے حکومت سندھ سے مطالبہ کیا کہ وہ اس واقعہ کا صرف نوٹس لے کر فائل کو بند کرنے کے بجائے اس حادثہ میں ملوث افراد کو قرار واقعی سزا دے اور ٹریفک پولیس میں سے رشوت ستانی کے ناسور کو ختم کرنے کے لئے رشوت خوروں کو سخت سزا دینے کے ساتھ ساتھ ان کی نوکریوں کوبھی ختم کیا جائے انہوں نے کہا کہ قانون کی بالادستی کے لئے سب سے پہلے حکمرانوں کو اس پر عمل درآمد کرنا ہو گا ،انہوں نے حکومتِ سند ھ سے مطالبہ کیا کہ حادثہ کے نتیجہ میں جاں بحق ہو نے والے اساتذہ اور طلبہ کے لواحقین کو فل الفور معاوضہ دیا جائے اور زخمی ہونے والے قوم کے نو نہالوں کو بہتر سے بہتر طبی امداد واقعتا فراہم کی جائے،انہوں نے پشاور میں ہونے والے بم دھماکہ کی بھی پر زور الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے کہا کہ خیبر پختواں خواہ کی حکومت عوام کی جان و مال کے تحفظ کے لئے میدان عمل میں آئے صرف کمروں میں بیٹھ کر تبدیلی کا نعرہ لگانے سے عوام کی جان و مال محفوظ نہیں ہو سکتی اور نہ ہی تبدیلی کا عمل شروع ہو سکتا ہے۔ انہوں نے کراچی میں ٹارگیڈڈ آپریشن ہونے کے باوجود امن و امان میں بہتری کے نہ ہونے پر کہا کہ جب تک پولیس کی سیاسی سرپرستی بند نہیں ہوتی اور جرائم پیشہ عناصر کو قانون کے صفحوں میں سے نکال کر الٹا نہیں لٹکایا جاتا اُس وقت تک کراچی میں امن کا قیام ممکن نہیں انہوں نے کہا کہ بلاوجہ کی ٹرانسفر اور سنیئر افسران کی موجودگی میں جونیئر افسران کو اہم ذمہ داریاں سونپی جانا غیر سنجیدہ عمل ہے اور اس کی جتنی مذمت کی جائے وہ کم ہے انہوں کہا کہ کراچی میں جاری بدامنی رینجرز اور پولیس و دیگر قانون نافذ کرنے والے اداروں کی کے ساتھ ساتھ حکومت پاکستان اور حکومت سندھ کے لمحہ فکریہ ہے۔